ہم اپنی روزمرہ کی خوراک میں تقریباً 9 چائے کے چمچ چینی کھاتے ہیں اور اگر اس سے زیادہ کھاتے ہیں تو اس کے جسم پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں لیکن اگر اس مقدار کو کم یا ختم کردیا جائے تو جسم میں بہت سی مثبت تبدیلیاں رونما ہوتی ہیں۔ موٹاپے کے جریدے میں تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ اگر اس مقدار کو مکمل طور پر ختم کر دیا جائے تو صرف نو دنوں میں آپ کے جسم میں حیرت انگیز تبدیلیاں آئیں گی۔

اس تحقیق میں 18 سے 18 سال کی عمر کے 43 موٹے بچوں کو دیکھا گیا جنہیں چینی کے بجائے نشاستہ دیا گیا، جس میں چینی کے برابر کیلوریز موجود تھیں۔ ان کی انسولین کی سطح خالی پیٹ پر 53 فیصد کم تھی۔ محقق ڈاکٹر رابرٹ لسٹنگ کا کہنا تھا کہ ان بچوں کی صحت میں خوشگوار تبدیلی آئی ہے اور اگر والدین اپنے بچوں کی خوراک سے شوگر کو نکال دیں تو وہ بہترین صحت کے حامل ہو سکتے ہیں۔

چینی

انہوں نے کہا کہ شوگر ہمارے جسم کے لیے اتنی ہی خطرناک ہے جتنی تمباکو یا کوکین کیونکہ چینی سے کیلوریز سے بننے والی چکنائی دل، جگر اور گردے کی بیماریوں کا باعث بنتی ہے۔ نقصان اس سے پیدا ہونے والی کیلوریز کا نہیں ہوتا بلکہ اس کے اثرات اور اس کی وجہ سے چربی ہمارے جسم کے لیے بہت نقصان دہ ہوتی ہے جس سے جسم میں کئی بیماریاں جنم لے سکتی ہیں۔

Share:

جواب دیں