گرمیوں میں بازار میں نظر آنے والے تمام لذیذ پھلوں کو دیکھ کر دل للچا جاتا ہے تو ان پھلوں کی خوشبو اور ذائقہ گرمیوں کا لطف دوبالا کر دیتا ہے۔ گرمیوں میں پھلوں کا بادشاہ آم بھی اپنی پوری شان و شوکت کے ساتھ بازار میں دستیاب ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ دیگر پھل غذائیت اور ملٹی وٹامنز کا خزانہ بھی ہیں۔ ان سے فائدہ نہ اٹھانا قدرت کی نعمتوں کی ناشکری کے مترادف ہے آلو بخارا بھی اسی موسم میں وافر پھل ہے جس کے فوائد اور غذائیت اگر لوگوں کو معلوم ہو تو اسے سونے کے دام فروخت کر دیں۔ اسے نہ صرف تازہ بلکہ خشک بھی کھایا جاتا ہے۔ اور خشک حالت میں بھی یہ اتنا ہی لذیذ اور صحت بخش ہے جتنا کہ یہ تازہ ہے۔ اس کا تعلق بادام اور آڑو کی نسل سے ہے۔ اس میں سے کچھ کھٹی اور میٹھی ہوتی ہے اور کچھ بہت میٹھی اور رسیلی ہوتی ہے۔
آلو بخارا کو ملٹی وٹامن پھل کہا جاتا ہے۔ کیونکہ اس میں وٹامن اے، بی 2، بی3، بی 6، وٹامن سی، وٹامن کے، وٹامن پی، چونا، فاسفورس، اسٹیل، کاربوہائیڈریٹس، فائبر، کاپر، مینگنیج، پوٹاشیم، سیلینیم، سوڈیم اور میگنیشیم، فاسفورس اور کیلشیم پایا جاتا ہے۔ اس میں منفرد فائٹونیوٹرینٹس اور فینول بھی ہوتے ہیں۔

آلو بخارا

آلو بخارا کے فوائد:

آلو بخارا میں اینٹی آکسیڈنٹس ہوتے ہیں جو کینسر کا خطرہ کم کرتے ہیں۔ یہ جسمانی اور ذہنی صحت کے لیے بھی اچھا ہے۔ یہ کولیسٹرول کی سطح کو کم کرتا ہے اور اسے جگر کی صحت کے لیے ایک امرت سمجھا جاتا ہے۔ اس میں پوٹاشیم کی بڑی مقدار ہوتی ہے۔ اس لیے یہ بی پی کو بھی کنٹرول کرتا ہے۔

ذیابیطس میں مفید:

آلو بخارا میں موجود حیاتیاتی مرکبات ذیابیطس سے بچاتے ہیں۔ جب کہ اس میں موجود فائبر جسم میں کاربوہائیڈریٹس کے جذب کو سست کردیتا ہے، وہیں یہ ذیابیطس کے شکار افراد کے لیے اس بیماری کی سنگینی سے بچنا آسان بناتا ہے۔

دماغی صحت کے لیے مفید:

مختلف طبی تحقیقی رپورٹس کے مطابق آلو بخارا میں موجود پولی فینول دماغی افعال کو بہتر بناتے ہیں جبکہ دماغی کولیسٹرول کی سطح کو کم کرتے ہیں جس سے عمر سے متعلقہ دماغی امراض جیسے الزائمر کا خطرہ بھی کم ہوتا ہے۔

نظام ہاضمہ کی بہتری:

آلو بخارا غذائی ریشہ کا بہترین ذریعہ ہے۔ جبکہ یہ جسم سے گندگی کے موثر اخراج میں مدد کرتا ہے۔ آلو بخارا قبض کے مریضوں کے لیے بہترین علاج ثابت ہو سکتا ہے۔

بینائی کے لیے فائدہ مند:

وٹامن سی اور بیٹا کیروٹین سے بھرپور پھل آنکھوں کی صحت بہتر کرنے میں مدد دے سکتے ہیں، کیونکہ یہ اجزاءآنکھوں کی صحت کو مستحکم رکھنے کے لیے فائدہ مند ہیں۔ آلو بخارا کیروٹین، لیوٹین اور دیگر سے بھرپور پھل ہے جو سورج کی الٹرا وائلٹ شعاعوں کے مضر اثرات سے تحفظ فراہم کرتے ہیں

دوران خون بہتر کرے:

آلو بخارا میں وٹامن K اور پوٹاشیم ہوتا ہے، جو جسم میں آئرن جذب کرنے کی صلاحیت کو بہتر بناتا ہے، اس کے ساتھ ساتھ آئرن اور کاپر کی بھی مناسب مقدار ہوتی ہے، جو خون کے سرخ خلیات کی تشکیل میں مدد دیتے ہیں۔ اس کے نتیجے میں خون کی کمی دور ہوتی ہے جبکہ خون صاف ہوتا ہے اور دوران خون بہتر ہوتا ہے۔

جلد کے لیے فائدہ مند:

اس میں موجود وٹامن سی اور اینٹی آکسیڈنٹس جلد کو خوبصورت بنانے، جوان رکھنے میں مدد دیتے ہیں، وٹامن سی جلد پر جھریوں اور باریک لکیروں کا خطرہ بھی کم کرتا ہے۔

جسمانی گرمی کا علاج:

آلو بخارے کا مزاج سرد تر ہے اور اس طرح جسم کی گرمی دور کرتا ہے، پیاس کو بجھاتا ہے اور بدن کی حدت میں نہایت موثر ہے۔ گرمی کی وجہ سے جن لوگوں میں سر میں درد ہوجاتا ہے اس صورت میں آلو بخارا کھانے سے فائدہ ہوتا ہے۔ موسم گرما میں قے اور متلی کا موثر علاج ہے۔ اس موسم میں پھوڑے پھنسیاں اور خارش جیسے عوارض لاحق ہوجاتے ہیں۔آلو بخارا ان عوارض کا علاج ہے۔

Share:

جواب دیں