گوگل نے خطرناک، وائرس سے بھری ایپس پر پابندی عائد کرتے ہوئے ان کو فوراً پلے سٹور سے ہٹا دیا ہے۔ پلے اسٹور کی ایپس اور اینڈرائیڈ شائقین کو اب انتباہ کیا جارہا ہے کہ وہ انہیں ابھی سے اپنے اسمارٹ فونز سے ڈیلیٹ کر دیں۔

ایسا کبھی نہیں ہوا کہ کوئی ایک ہفتہ اینڈروئیڈ کے مداحوں کو خطرے سے آگاہ کیے بغیر گزرا ہو اور افسوس کی بات یہ ہے کہ اس ستمبر کے آغاز میں ہی مشہور آپریٹنگ سسٹم کے مداحوں کو متعدد ایپس پر متنبہ کیا جا رہا ہے کہ جن میں جوکر میلویئر ممکنہ طور پر موجود ہے۔

ایک بار پھر سیکیورٹی ٹیم نے مزید چھ اینڈرائیڈ ایپلی کیشنز دریافت کیں ہیں جو پوشیدہ جوکر میلویئر سے فون میں موجود ڈیٹا مٹا سکتی ہیں۔

مزید وضاحت کرتے ہوئے، ایک سیکیورٹی ماہر نے کہا: “جوکر ایک بدنیتی پر مبنی بوٹ ہے (جسے فلائی ویئر کے طور پر درجہ بند کیا گیا ہے) جس کا کام مرکزی سرگرمیاں کلکس کی تقلید کرنا اور ایس ایم ایس کو روکنا ہے جو ناپسندیدہ ادا شدہ پریمیم خدمات کو سبسکرائب کرنے کے لیے صارفین کو مجبور کرتا ہے۔

گوگل سیکیورِِٹی ماہرین نے ایک بار پھر گوگل پلے پر متاثرہ ایپلی کیشنز کی نشاندہی کی جس سے اس کے پلیٹ فارم پر بدنیتی پر مبنی سرگرمیوں کو روکنے کے لئے اسٹور کی جدوجہد ظاہر ہوتی ہے۔

وائرس زدہ ایپس میں مندرجہ ذیل ایپس شامل ہیں۔

  • Push Message-Texting&SMS • 10,000+ downloads
  • Emoji Wallpaper • 10,000+ downloads
  • Separate Doc Scanner • 50,000+ downloads
  • Fingertip GameBox • 1,000+ downloads
  • Safety AppLock • 10,000+ downloads
  • Convenient Scanner 2 • 100,000+ downloads

اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ کے فون پر ان میں سے کوئی بھی ایپ موجود ہے تو پھر ہمارا مشورہ ہے کہ آپ فریب کاری سے بچنے کے لیے ان ایپس کو فوری طور پر اپنے موبائل سے ڈیلیٹ کر دیں۔

Share: