ٹویوچ اور یوٹیوب کو پیچھے چھوڑ دینے کی کوشش میں ، فیس بک نے پیر کے روز گوگل پلیئر اسٹور پر اینڈروئیڈ کے لئے اپنی گیمنگ ایپ لانچ کی ہے اور کچھ ہی وقت میں 50 لاکھ سے زیادہ ڈاؤن لوڈ ہو چکے ہیں۔

فیس بک گیمنگ ایپ بلکل مفت ہے اور لاکھوں کیمز کے دیوانے اس کے ذریعے اپنے اسمارٹ فونز سے براہ راست گیمز دیکھنے اور کھیلنے کی سہولت سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔

جیسا کہ ایپل بھی اس وقت کلاوڈ بیس گیمنگ کو فروغ دے رہا ہے ایسے میں دیکھتے ہیں کہ ایپل فیس بک کو ایپل صارفین کے لیے ایپ لانچ کرنے دے گا یا نہیں۔

facebook gaming app

اس ایپ میں سب سے خاص بات یہ ہے کہ آپ گولائیو کے ۱ بٹن سے اپنے موبائل پر کھیلی جانے والی گیم کو براہ راست آن لائن پوسٹ کر سکتے ہیں۔

فڈجی سیمو ، فیس بک گیمنگ ایپ کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ہم نے ہمیشہ گیمنگ کو فروغ دینے کی ہر ممکن کوشش کی ہے کیونکہ ہم جانتے ہیں کہ گیم کھیل کر کوئی بھی نہ ڈرف مصروف زندگی میں لطف حاصل کر سکتا ہے بلکہ اس سے سماجی روابط بھی بڑھتے ہیں اور یہی ہمارا مشن ہے۔

فیس بک گیمنگ ایپ پر ابتدا میں کوئی اشتہار نہیں ہوگا۔

فیس بک فی الحال ٹویچ میں “بٹس” کی طرح ناظرین کی “ستاروں” کی درجہ بندی پر انحصار کر رہا ہے۔

FB gaming app

کمپنی گذشتہ 18 مہینوں سے لاطینی امریکہ اور جنوب مشرقی ایشیاء میں ایپ کے ورژن کی جانچ کر رہی ہے۔

آپ اپنے دوستوں کے ساتھ کچھ آرام دہ اور پرسکون کھیل کھیلنے کے لئے پلیٹ فارم کا استعمال کرسکتے ہیں۔ ایپ میں چیٹ کی سہولت بھی دی گئی ہے۔

لائیو اسٹریمنگ سافٹ ویئر سروس اسٹریم لیبس کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق 2020 کی پہلی سہ ماہی میں ، فیس بک کے گیم اسٹریمنگ پلیٹ فارم کو دیکھنے کے تقریبا 554 ملین گھنٹوں کا عدادوشمار لگایا گیا ہے، جبکہ یوٹیوب کے 1.1 ارب اور ٹویچ کے لئے 3.1 بلین گھنٹے اس اندازے کا حصہ ہیں۔

Share: