آج کل ہم وائیٹ بورڈز اور بزنس کارڈز کی بہت ساری تصاویر بنا رہے ہیں اور اس کام کو بہتر طور پر انجام دینے کے لیے کیمرہ اپنے AI سمارٹس کو استعمال کر رہا ہے-

ہم اپنے فون کیمرہ کو دوستوں اور دوسرے لوگوں کو تصاویر بھیجنے کے علاوہ اور بھی کئی مقاصد کے لیے استعمال کر رہے ہیں ان میں ریسٹورنٹ رسیدیں، شاپنگ لسٹس، نقشے، کلاؤڈ اسٹوریج سسٹم اور بہت ساری ایسی چیزیں شامل جن کی معلومات ہم رکھنا چاہتے ہیں-
اسی لیے مائیکروسافٹ نے اپنےمفت پِک کیمرہ ایپ کو iOS کے لیے اپ ڈیٹ کر دیا ہے تاکہ جب وائیٹ بورڈز، بزنس کارڈز اور دوسرے کاغذات کی تصاویر لی جائیں تو ان کو سمجھا جا سکے-

آئی فون X کے بارے میں دس اہم باتیں

مائیکروسافٹ نے جمعرات کو بلاگ پوسٹ میں کہا “ایک بار جب شٹر پر کلک کیا جاتا ہے تو یہ ایپ امیج کو بہتر بنانے کے لیے AI کو استعمال کرتی ہے جیسا کہ کناروں کی کٹائی،رنگ اور سر بڑھانا، توجہ مرکوز کرنا اور براہ راست نقطہ نظر پرمبنی تصویر پیش کرنا وغیرہ”

اگر آپ کاروباری مقاصد کے لیے اس ایپ کو استعمال کرنا چاہتے ہیں تو مائیکروسافٹ کے مطابق آفس لینز ایک متعلقہ ایپ ہے اس مقصد کے لیے ایڈوب سکین، ڈراپ باکس اور گوگل ڈرائیو جیسی ایپس کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے-

یہ تمام آلات اینڈرائیڈ پاورڈ فونز میں بھی موجود ہوتے ہیں جو کہ PDF ڈاکومنٹس کو بنانے کے لیے زیادہ بہتر ہوتے ہیں اور JPEG امیج سے زیادہ مفید ہوتے ہیں-

مائیکروسافٹ پِکس اب صرف ایپل ایپ سٹور پر دستیاب ہے لیکن کمپنی کا ارادہ اینڈرائیڈ ورژن کو ریلیز کرنے کا ہے-

تصاویر بنانے، ان کو بہتر کرنے اور فلٹر لگا نے کے لیے پِکسز مصنوعی ذہانت کی ٹیکنالوجی کا استعمال کرتی ہے اور اب اس نے ڈاکومنٹس کے لیے AI ٹرکس کا استعمال شروع کر دیا ہے۔ فلٹر کی وجہ سے امیج آپ کو خمدار اور لائن والے پیپرز کی طرح دکھائی دیتے ہیں جو کہ پرانے وقتوں میں پیلے رنگ کی کھدائی کی طرح دکھتے تھے- آپ اس میں اور بھی مفید تبدیلیاں بھی کر سکتے ہیں جیسا کہ گرے سل ڈاکومنٹس میں تبدیل کرنا اور وائیٹ بورد امیجز کو بہتر بنانا وغیرہ-

Share: