فیس بک نوجوانوں کو ویڈیو پلیٹ فارم کی طرف متوجہ کرنا چاہتا ہے۔ سماجی میڈیا پلیٹ فارم پر لائف سٹیج ایپلی کیشن (جو کہ اتنا ناکام ہوا کہ آپ آج شاید اس کے بارے میں پہلی دفعہ ہی سن رہے ہوں) ایک اندازہ کے مطابق ایک سال پہلے لانچ کی، اس کو کامیاب بنانے کے لئے بہت جدوجہد کی گِئی مگر ناکام ہو گئی۔

تاہم سلیکن ویلی سے ایک اہم خبر کہ فیس بک ایک نئی ویڈیو سٹریمنگ سروس متعارف کروانے جا رہا ہے۔فیس بک اس سروس کے ذریعے کچھ لائیو سیریز اور پہلے سے ریکارڈ شدہ مگر مختصر ویڈیوز نشر کرے گا۔ یہ سروس یو ٹیوب اور نیٹ فلیکس جیسی روایتی ٹی وِی سروسز کو یقیناً مشکل میں ڈال دے گی۔

لائف سٹیج پراجیکٹ میں فیس بک صرف نوجوانوں کو ایک پلیٹ فارم پر لانے اور ین کے درمیان بات چیت کو آسان بنانے کی کوشش میں مصروف تھا مگر اب لگتا ہے کہ فیس بک نے اس سے سبق حاصل کر لیا ہے اور اس ویڈیو پلیٹ فارم کے ذریعے سے اب صرف نوجوانوں کو ہی نہیں بلکہ تمام انٹرنیٹ صارفین کو نشانہ بنانے کی ٹھان لی ہے۔

فیس بک شاید نوجوانوں کی توجہ حاصل کر کے ان میں مقبول ہوتے ہوئے سنیپ چیٹ جیسی ایپلی کیشن کا مقابلہ کرنا چاہتا تھا مگر اتنے کم صارفین کے ساتھ ایسا کرنا ممکن نہیں لگ رہا تھا تب ہی فیس بک نے اس نئے پراجیکٹ کا اعلان کیا۔ ویڈیو پلیٹ فارم فیس بک کی تیسری کوشش ہے کہ وہ صارفین کی تعداد کو بڑھاتے ہوئے دوسری ایپلی کیشنز کا مقابلہ کر سکے۔ ویسے تو فیس بک میں کافی حد تک سنیپ چیٹ کے فیچر آفر کر رہا ہے جیسا کہ کہانیوں کو براہراست نشر کرنا وغیرہ۔ 

دنیا تیزی سے بدل رہی ہے اور آج کل انٹرنیٹ پر ایک یا دو کمپنیاں اجارو داری قائم نہیں کر سکتی کیونکہ سوشل میڈیا مارکٹنگ کا رجحان بڑھ رہا ہے اور مقابلہ سخت سے سخت ہوتا جا رہا ہے کیونکہ صارفین کی پسند ناپسند میں اضافہ ہو رہا ہے۔ آج کل کے نوجوان بات چیت کرنے کے لئے ایک سے زیادہ سوشل میڈیا پلیٹ فام استعمال کرتے ہیں اور خاص کر مٰغربی ممالک میں اس رجحان میں بے پناہ آضافہ دیکھنے میں آیا ہے کہ نوجوان مختصر ویڈیوز اورغائبانہ پیغامات کے ذریعے  بات چیت کرنے  کے طریقوں پر تجربات کر رہے ہیں۔

fb video streaming img

ان سب مشکلات کے ہوتے ہوئے بھی فیس بک دنیا کا سم سے مقبول پلیٹ فارم ہے جس کے صارفین کی تعداد قریب 2 بلین ہے۔ فیس بک اپنی اس نئی سروس میں ایک صاف اور آسان ڈیزائن فراہم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے جسے ہر کوئی آسانی سے استعمال کر سکے۔ مزید یہ کہ یہ ایک منفرد تجربہ ہوگا جس میں کچھ نئی چیزوں کے ساتھ ساتھ کچھ پریشان کرنے والے پہلو بھی ہونگے جیسا کہ نشر کرنے والی ویڈیو کوئی بھی دیکھ سکے گا۔

نئی ویڈیو سٹریمنگ سروس کے لانچ کرنے سے پہلے یہ بات بھی سامنے آئی کہ نوجوان فیس بک کے بہت سارے فیچرز کا استعمال نہیں کرتے جیسا کہ مختلف گروپس میں بات کرنا وغیرہ۔ نوجوان فیس بک کو نجی پیغامات کرنے اور اپنے دوستوں سے معلومات شِئیر کرنے کے لیے استعمال کرتے ہیں جبکہ گروپس میں بات کرنے کے لیے سنیپ چیٹ جیسی ایپلی کیشنز پر انحصار کرتے ہیں۔ مگر اب لگتا ہے کہ فیس بک کو سنجیدہ کوشش کرنی ہوگی کہ وہ نوجوانوں کو ایک ہی جگہ رکھتے ہوئے ان کی دلچسپی کو برقرار رکھے اور اپنا وجود قاِم رکھے۔

Share: