کینیڈین پولیس نے خبردار کیا ہے کہ فیس بک پر گمشدہ بچوں کی پوسٹس شیئر کرنے سے گریز کیا جانا چاہئے کیونکہ وہ کسی کی زندگی خطرے میں ڈالنے کا باعث بن سکتی ہے۔ رائل کینیڈین ماﺅنٹڈ پولیس (آر سی ایم پی) نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر گمشدہ بچوں کی تصاویر یا تفصیلات پر مبنی پوسٹس شیئر کرنا خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔ بیان کے مطابق ‘ایسا ہوسکتا ہے کہ وہ بچے شاید اپنے تحفظ کے لیے چھپے ہوئے ہوں’۔ ان بچوں کی تصاویر کو شیئر کرکے ان کی زندگیوں کا خطرے میں ڈالا جاسکتا ہے۔

کینیڈین پولیس نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ کسی بھی تصویر کو شیئر کرتے ہوئے اس کی سورس کو ضرور چیک کریں۔ بیان کے مطابق اگر وہ تصویر کسی مصدقہ پولیس ذرائع یا قابل اعتبار میڈیا آﺅلٹ سے تعلق نہ رکھتی ہو تو ممکنہ طور پر وہ پوسٹ ہوسکتا ہے ٹھیک نہ ہو۔ کینیڈین پولیس کی اس پوسٹ پر لوگوں نے حیرت کا اظہار کیا۔ انہوں نے لکھا کہ ہمیں تو لگتا تھا کہ اس طرح کی پوسٹس کو سرچ کرکے ہم گمشدہ بچوں کی مدد کررہے ہیں تاہم حقیقت جان کر ہمیں شدید دھچکا لگا ہے۔ ایک صارف نے لکھا ‘میں نے کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ ان پوسٹس کو چھان بین کرکے شیئر کرنا چاہئے، اب آگے میں ایسا ہی کروں گا’۔

Share: