دنیا میں اس وقت سام سنگ گلیکسی ایس ایٹ کو بہترین اینڈرائیڈ فون قرار دیا جارہا ہے تاہم “چینی کمپنی” شیاؤمی نے اسی جیسے فیچرز کی ڈیوائس متعارف کرائی جس کی قیمت بھی باقی اینڈرائیڈ فون کے مقابلے میں لگ بھگ پچاس فیصد کم ہے۔

بیجنگ میں شیاؤمی نے بدھ کو ایک تقریب کے دوران اپنا نیا فلیگ شپ فون می سکس متعارف کرایا ہے۔

گلیکسی ایس ایٹ کی طرح اسنیپ ڈراگون 835 پراسیسر، 5.15 انچ اسکرین کی ڈیوائس میں سکس جی بی ریم، 64 جی بی اسٹوریج، ڈوئل اسٹیریو اسپیکرز، 12 میگا پکسل کے دو بیک کیمرے، 3350 ایم اے ایچ بیٹری اور واٹر ریزیزٹنس جیسے بہترین فیچرز موجود ہیں۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اس میں ٹیلی فوٹو لینس کے ساتھ وائیڈ اینگل لینس دیا گیا ہے جیسا آئی فون سیون پلس کے کیمرے میں ہے، اس کا کیمرہ اس لیے بھی قابل توجہ ہے۔

بس اس کا ڈیزائن ایس ایٹ جیسا خوبصورت نہیں جو کہ بیزل لیس فون ہے۔ تاہم اس فون میں 2×2 ڈوئل وائی فائی کا فیچر دیا گیا ہے، یہ ایسی ٹیکنالوجی ہے جو وائرلیس نیٹ ورکس پر کنکٹیویٹی اور رفتار کو بہتر بناتی ہے جبکہ اس میں رات کو بینائی کو بچانے کے لیے الٹرا ڈارک موڈ بھی دیا گیا ہے۔

 

فیچرز کے لحاظ سے یہ مارکیٹ میں دستیاب اتنی قیمت میں بہترین فون سمجھا جاسکتا ہے جو کہ گلیکسی ایس ایٹ کو سخت ٹکر دے سکتا ہے۔

تاہم یہ فیچرز کمپنی نے بتائے ہیں اور ان کی آزمائش تک حتمی فیصلہ نہیں کیا جاسکتا مگر یہ سوچا جاسکتا ہے کہ یہ سام سنگ کے فلیگ شپ فون جتنا بہتر ہوسکتا ہے۔

اس کے سکس جی بی اور 64 جی بی اسٹوریج والے فون کی قیمت 363 ڈالرز (لگ بھگ 38 ہزار پاکستانی روپے) جبکہ 128 اسٹوریج والا فون 421 ڈالرز (44 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) ہے اور اس کے مقابلے میں گلیکسی ایس ایٹ 87 ہزار روپے کا ہوگا یعنی یہ پچاس فیصد سستا ہے، جبکہ ہیواوے پی ٹین کی قیمت 696 ڈالرز ہے۔

ابھی کمپنی کی طرف سے یہ واضح نہیں کہ اس فون کو کب تک پاکستان میں فروخت کے لیے پیش کیا جائے گا۔

Share: